9

نواز شریف الٹے سیدھے بیان دے کر کسے رام کرنے کی کوشش کررہے ہیں؟ شیخ رشید نے ساری کہانی کھول کر قوم کے سامنے رکھ دی

لاہور (انر پاکستان آن لائن)عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہا ہے کہ نواز شریف کرپشن میں سزا یافتہ ہونے سے قبل عالمی حمایت حاصل کرنا چاہتے ہیں، یہ سب کرپٹ ٹولہ ہے جسے نکال باہر کرنا چاہیے۔ نجی ٹی وی سے گفتگو کرتے ہوئے شیخ رشید نے کہا کہ نواز شریف کرپشن

میں سزا یافتہ ہونے سے قبل عالمی سپورٹ لینا چاہتے ہیں، یہ سب کرپٹ ٹولہ ہے جسے نکال باہر کرنا چاہیے ، وزیراعظم کے خلاف ایل این جی کا کیس 8،10 دن میں کھلنے والا ہے، اب یہ کہیں گے کہ سارے کیس ہمارے خلاف کھل رہے ہیں۔ انہوں نے کہا نواز شریف غیر ملکیوں کے آلہ کار بن چکے ہیں۔ دوسری طرف ایک خبر کے مطابق سابق وزیر اعظم نواز شریف کا کہنا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کا نہ کوئی کردار ہے، نہ نظریہ، تحریک انصاف پگڑی اچھال پارٹی ہے اور گندی زبان والی پارٹی ہے۔تفصیلات کے مطابق احتساب عدالت میں پیشی کے موقع پر سابق وزیر اعظم نواز شریف نے میڈیا سے غیر رسمی گفتگو کی۔صحافی نے سوال کیا کہ پاکستان تحریک انصاف نے آپ کے قومی کمیشن بنانے کی تجویز مسترد کردی جس پر نواز شریف نے کہا کہ تحریک انصاف کا نہ کوئی کردار ہے، نہ نظریہ۔ تحریک انصاف پگڑی اچھال پارٹی ہے اور گندی زبان والی پارٹی ہے۔نواز شریف کا کہنا تھا کہ تحریک انصاف امپائر کی انگلی کی طرف دیکھنے والی پارٹی ہے۔ ان میں ووٹ کو عزت دینے کی کوئی بات نہیں۔انہوں نے کہا کہ اچھا ہوا جو پختونخواہ میں ان کی حکومت تھی،

پختونخواہ کے عوام نے ان کی تبدیلی دیکھ لی۔ خیبر پختونخواہ میں کوئی کام نہیں ہوا۔ واضح رہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں ڈالنے کے لیے لاہور ہائیکورٹ میں درخواست دائر کردی گئی۔تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں ایڈووکیٹ اظہر صدیقی نے درخواست دائر کی جس میں کہا گیا ہے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف اور ان کی صاحبزادی مریم نواز کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کیا جائے۔درخواست میں وزارت داخلہ اور وفاقی حکومت کو فریق بنایا گیا ہےدرخواست گزار کا کہنا ہے کہ نواز شریف اور مریم نواز کسی بھی وقت فرار ہوسکتے ہیں، عدالت دونوں کا نام ای سی ایل میں شامل کرنے کا حکم دے۔خیال رہے کہ گزشتہ برس پاناما کیس میں نواز شریف کو نا اہل کیے جانے کے فوراً بعد بھی شریف خاندان کے افراد کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کے لیے اسلام آباد ہائیکورٹ میں درخواست دائر کی گئی تھی۔بعد ازاں شریف خاندان کے خلاف دائر کرپشن ریفرنس کے دوران قومی احتساب بیورو (نیب) نے بھی نواز شریف کا نام ای سی ایل میں ڈالنے کی سفارش کی تھی تاہم تمام درخواستوں پر ابھی تک کوئی حتمی فیصلہ نہیں دیا جاسکا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں