36

مجھے فحش فلموں نے برباد کر دیا ۔۔۔۔۔شیخوپورہ کی 6 سالہ ایمان فاطمہ کو زیادتی کے بعد قتل کرنیوالا ملزم ہوس کا شکاری کیسے بنا؟ خبر آگئی

شیخوپورہ (ویب ڈیسک) مریدکے کی آبادی چوہڑہ میں 6 سالہ ایمان فاطمہ کو زیادتی کا نشانہ بنانے کے بعد بیدردی سے قتل کرنے والے ملزم بابر نے کئی بچیوں سے زیادتی کرنے کا انکشاف کردیا۔ ملزم موبائل فون اور موبائل فونز شاپس کے باہر ایل سی ڈی سنٹرز سے بلیو فلموں کے ذریعے شیطان بنا۔

ملزم بابر عرف للّی نے دوران تفتیش سنسنی خیز انکشاف کرکے معاشرے کیلئے لمحہ فکر پیدا کردیا ہے۔ ملزم نے بتایا موبائل فون نیٹ کے ذریعے بلیو فلمیں دیکھتا جبکہ موبائل فون شاپس کے باہر لگی ایل سی ڈی شاپس سے بلیو فلمیں حاصل کرتا اور ایک چرواہے سے درندہ بن گیا، آخر کار پکڑا گیا۔ پولیس کے مطابق ملزم کو کمسن بچی ایمان فاطمہ کی والدہ کو لالچ دے کر پکڑا گیا کہ کسی پر شک کریں ملزم پکڑائیں گی تو وزیراعلیٰ میاں شہباز شریف پانچ لاکھ روپے انعام دیں گے جس پر ایمان فاطمہ کی ماں نے ملزم کی نشاندہی کی جو عام لوگوں میں پھر رہا تھا، پولیس یوں کامیاب ہوگئی۔ ڈی پی او شیخوپورہ نے مریدکے صدر پولیس کو بہترین کارکردگی پر جہاں ایک لاکھ روپے انعام اور تعریفی سرٹیفکیٹ دیا ہے وہاں والدین سے اپیل بھی کی ہے اپنے بچوں اور ارد گرد کے ماحول پر نظر رکھیں۔ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق جنوبی چھاونی کے علاقے گھر میں پرسرار طور پر جاں بحق ہونے والی سابق خاتون لیگی رکن اسمبلی پنجاب کی لاش پولیس نے پوسٹ مارٹم کے بعد ورثاء کے حوالے کر دی جو تدفین کے لئے آبائی علاقے لے گئے تاہم تاحال تھانہ جنوبی چھاؤنی پولیس کی جانب سے واقعہ کا مقدمہ درج نہ کیا جا سکا ہے۔پولیس نے جائے وقوعہ سے لاش قبضہ میں لیکر تمام شواہد اکٹھے کرکے پوسٹ مارٹم کے لئے بھجوا دی تھی گزشتہ روز پولیس نے پوسٹ مارٹم کا عمل مکمل ہونے کے بعد لاش خاتون کے بیٹے اسد شاہد کے حوالے کر دی جو تدفین کے لئے آبائی علاقے لے گیا۔ پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کی موت کے حوالے سے جسم کے کچھ اجزاء کیمیکل تجزیے کے لئے فرانزک سائنسی ایجنسی بھجوا دئیے ہیں جن کی رپورٹ ملنے کے بعد ہی موت کا ختمی تعین کیا جا سکے گا تاحال تھانہ جنوبی چھاؤنی کی پولیس واقعہ کا مقدمہ درج نہ کر سکی ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ خاتون کے بیٹے کی جانب سے کارروائی کے لئے کوئی درخواست نہیں دی گئی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں